عمر رسیدہ اور مزدور آدمیو ں کے لیے تحفہ
اسگندناگوری،بدھا را، کھٹہ شریںہموزن صبح وشام ایک چمچہ چھوٹا نیم گرم دودھ کے ہمراہ اعصابی کمزوری، پٹھوں کے کھچاﺅ کے لیے دیا ۔یہ جسم میں ایک دم کرنٹ لگادیتا ہے۔ عمر رسیدہ اور مزدور آدمیوں کو دیاجو دن رات مشقت کرتے ہیں ۔ ان کے لیے لاحواب ہے۔ بوڑھوں کیلئے سردی کا موسم لاجوا ب گزرتا ہے ۔کمردرد ۔جوڑوں کا درد اعصابی کھچاﺅ کے لیے لاجواب ہے۔گنتی یاد نہیں بے شمار لوگوں کو استعمال کرایا نہایت فائدہ مند ثابت ہوا ۔ 20-15 سا ل سے لوگوں کو دے رہاہو ں ۔

یورک ایسڈ اور دردو ں سے نجا ت
سونف ،ملٹھی اور سورنجاں شریں کو ہموزن یورک ایسڈ معد ے کے لیے قبض کے لیے صبح ،دوپہر، شام ایک ایک چمچہ چھوٹا دودھ نیم گرم کے ہمراہ۔گھٹنو ں کے درد،کمر اور جوڑوں کے درد خاص طور پر معدے اور یورک ایسڈ کے مرےضوں کے لیے یکساں مفید ۔ایسے بہت سے مریض جنہوں نے بے شما ر ادویا ت کھائیں لیکن اندر کی تپش ختم نہیں ہوئی۔ سیاہ چہرہ جلا ہواجسم 15-20 دن میں بالکل تندرست ہو گیا۔ تقریباً دو سال سے کئی لوگوں کو دیا بہت نفع مند ثابت ہوا۔

مر دوں اور عورتو ں کی پو شیدہ بیما ریو ں کا کامیاب علاج
بکھڑا 200 گرام، پھٹکڑی سفید 50 گرام پیس کر صبح وشام کچی لسی دودھ والی میں نمک ڈال کر ایک ایک چمچہ لیں ۔ جریان لیکوریا ،گرمی سے پیشاب کی جلن ،کثرت احتلام عورتوں مردوںکے لیے یکساں مفید۔ ایسے ایسے لا علاج مرےض تندرست ہوئے کہ بے شمار ادویات کھائیںمگر افا قہ نہ ہوا۔ عورتوں کالیکوریا ختم ہوجاتا ہے، بھوک بہت لگتی ہے۔دو یا تین سال سے استعمال کررہاہوں۔

سو زاک کا علا ج ممکن ہے
سوزاک کے لیے حکیم ہری چند ملتانی کی کتاب تاج المجربات سے ایک نسخہ لیا۔ جو کھار، قلمی شورہ، ریوند چینی ، ہموزن لیکر آپس میں ملا لیں۔ خوراک مقدار ڈےڑھ گرام صبح وشام شربت صندل کے ساتھ دیں۔سوزاک کے لیے لاجواب چیز ہے۔ چند دنوں میں مریض تندرست ہوجاتا ہے شربت صندل خالص ہوبلکہ خودتیار کرلیں۔ ایک مرےض جو لاعلاج تھا ۔ اس کو یہ والا نسخہ استعمال کروایا۔ ابھی ایک ماہ قبل اﷲپاک نے اسے بےٹا دیا ہے ۔

دانت درد کا مجرب اور آسان ٹوٹکہ
ایک گاہک نے مجھے یہ نسخہ دیا۔ دانت درد کے لیے یا دانت ہلتے ہوں۔ 6-5ماہ قبل دیا ۔ڈراپر میں ڈال کر دیتے اور روئی پر ڈال کردرد والی جگہ پر لگا تے ہیں ۔وہ بھی تندر ست ہو گئے جو دانت کے نےچے کوئی چند چباہی نہیں سکتے تھے۔سیرپ متیٹھی لیٹڈ جو عام طو پر زخموںپر اورپالش برائے فرنےچر کے لیے استعمال ہو تاہے 50گرام اورست اجوائن 5گرام ملاکر محفوظ رکھیںاور ضرورت کے وقت استعمال کریں ۔جس صاحب نےیہ نسخہ دیا اس نے کہا 35سال سے اعتماد کے ساتھ استعما ل کررہا ہوں ۔

جریان قابل علاج ہے
یہ نسخہ بھی ہری چند کی کتاب سے لکھا لیکن کچھ اضافہ کیا۔ نسخہ یہ ہے۔ بھنڈی کے بےج ۔تخم سروالی یاسلارہ گوندکیکر ‘پھلی کیکر ، موچرس ‘چینی سب برابر وزن پیس کرایک چمچہ صبح وشام دودھ کے ہمراہ دیں۔ ان شاءاللہ بہت زیا دہ فا ئدہ ہوگا۔ ایک نوجوان نے بتایاکہ 10ماہ جریان کا علاج کر وایا۔رتی برابر فرق نہیں پڑا ۔اس کو یہ نسخہ ایک ماہ استعمال کر وایا۔ کچھ عرصہ کے بعد ملاقات ہوئی تو اس نے کہا کہ ایسے ہے جیسے زندگی میں جریان نہیں ہوا ۔بہت سے لوگوں کو دیا سب نے مثبت رپورٹ دی۔ لیکوریا،سرعت انزال اور رقت والوں کو بھی دیا سب کو نفع ہوا ۔

ڈسٹ الرجی سے نجا ت
یہ نسخہ اپنی بیوی کو دیا۔ اس کو چھینکیں نہیں رکتی تھی پھر کبھی چھینک نہ سنی۔ کھٹہ شریں1کلو ۔کلونجی 250گرام ۔ہالیہ 100گرام۔ کا سنی 50گرام۔ میتھرے 50گرام۔ یہ نبوی صلی اللہ علیہ وسلم نسخہ ہے ایک چمچہ صبح وشام ،بلغم ،ڈسٹ الرجی اور نزلہ زکام میں بھی مفید ہے۔ اعصابی کمزوری کے لیے فائدہ مند ہے ۔کزن کی چچی کا بھی یہ حال تھاکہ اس کو نزلہ اور چھینکیںہر وقت آتی تھیں اس کو بھی یہی نسخہ 2ماہ تک استعمال کرایا ،سال ہوگیا پھر یہ تکلیف نہیں ہوئی۔

اعصابی طاقت کیلئے یہ نبوی صلی اللہ علیہ وسلم نسخہ ہے
کٹھہ شریں 750گرام ۔کلونجی 250گرام ۔ہالیہ 200گرام۔ماتھر60گرام کوٹ پیس لیں ۔ خورا ک استعمال ایک چھوٹا چمچہ 3بار دن میں استعمال کریں اعصاب کی طاقت کیلئے نہا یت مفید ہے ۔
(عطیہ :خالد صاحب اردوبازار۔ لاہور)

صدر ضیا ءالحق کے ذاتی معا لج
میری عمر 80سال ہے۔ رےٹائرڈ زندگی گزار رہا ہوں۔ صحت اﷲکے فضل وکرم سے ٹھیک ہے۔ کوئی عارضہ نہیں ہے آپکے رسالہ کیلئے ایک تجربہ لکھ رہا ہوں شاید کسی کا بھلاہوجائے ۔ آج سے 23سالہ پہلے میرے پےٹ میں درد ہوا۔ سی ایم اےچ راولپنڈی کے ڈاکٹر نے مجھے 5دن کی دوادی۔ ایک خوراک لینے سے معدہ ہانڈی کی طرح ابلنے لگا اور مجھے جلاب آنے شروع ہوگئے۔ دودن ایسی حالت رہی پھر میںنے محلے کے ڈاکٹر سے ڈرپ لگوائی اور جلاب بند ہوئے لیکن اس کے بعد میرے معدہ کا فعل بند ہوگیا اور پانچ سال نشاستہ دار غذا ےعنی روٹی چاول نہ کھاسکا ۔میں نے علاج کیلئے صدر ضیا کے ذاتی ڈاکٹر سے رجو ع کیا۔ چھ ماہ علاج سی ایم اےچ سے کرایا مگر تکلیف بدستور رہی ےعنی روٹی یا چاول کھانے کے بعد منہ سے سفیدی مائل پانی آتا اور منہ کا ذائقہ خراب رہتا۔ میں نے ہر اچھے حکیم ،ہومیو پیتھک او رڈاکٹر سے علاج کروایا مگر کوئی فائدہ نہ ہوا۔ عرصہ پانچ سال تک روٹی نہ کھاسکاصرف دودھ پر گزارہ کیا۔ ایک دن ایک بزرگ مل گئے انہوں نے چنے اور امرود کھانے کامشورہ دیا۔ ہاں حکیم ڈاکٹر دونوں کی رائے تھی کہ معدہ میں تیزابیت ہے خیر چنے کھانے سے معمولی فائدہ ہوا لیکن امرود صرف تین دن پاﺅ بھر کھائے کہ یہ بیماری بالکل ختم ہوگئی اور میں نے 5سال بعد روٹی کھائی اور اﷲکا شکر اداکیا تب سے قدرتی علاج اور جڑی بوٹیوں سے دلچسپی ہے۔ (مرسلہ : محمد ایو ب ۔ راولپنڈی )

عذاب قبر سے امن
میت کو دفن کرتے وقت جو مٹی قبر کی کھدائی میں اندر سے نکلتی ہو اسی مٹی کو ہاتھ میں لیکر سات بار سورةالقدر پڑھ کر دم کریں اور پھر وہ مٹی میت کے پاس اس لحد میں رکھ دیں۔ان شاءاﷲ تعالیٰ وہ میت عذاب قبر سے محفوظ و مامون ہوگی۔

سختی قبر
(1)شب جمعہ بعد نماز عشاءدورکعت نماز (بہ نیت نجات سختی قبر)پڑھیں۔ہر رکعت میں بعد سورہ فاتحہ کے سورةالزلزال پندرہ پندرہ مرتبہ پڑھنی ہے ۔اگر سورة الزلزال زبانی یاد نہ ہو تو ہر رکعت میں سورہ فاتحہ کے بعد سورہ اخلا ص پندرہ پندرہ مرتبہ پڑھ سکتے ہیں ۔پروردگار عالم ہر جمعہ کی شب اس نماز کے پڑھنے والے کو اس کے انتقال کے بعد عذاب قبر سے نجات دے کر سختی کورفع کرلے گا (ان شاءاﷲ تعا لیٰ )۔ (2)ہر نماز کے بعدروزانہ تین مرتبہ ذیل کے کلمات پڑھیں۔
بِسمِ اﷲِ الرَّحمٰنِ الرَّحِیمِo بِسمِ اﷲِ وَعَلٰی مِلَّةِ رَسُولِ اﷲِ
ان شاءاﷲتعالیٰ:ان کلمات کے پڑھنے والے پرسے اﷲ پا ک عذاب قبر ،تنگی گوراور تاریکی قبر کورفع کردے گا۔
(3)بعد نماز عشاءہر شب کو ایک مرتبہ سورہ ملک اور تین مرتبہ سورہ التکاثر پڑھنے سے اﷲپاک اسے عذاب قبر ودوزخ سے نجات دے گاانشاءاﷲتعالیٰ(مر سلہ : خ۔ا،گوجرانوالہ )

میرا نزلہ عبقری سے درست ہوا
مجھے نزلہ رہتا تھا بلکہ اب تو بہت کم ہوتا ہے کیونکہ آپ کے رسالے عبقری میں میں نے شہد اور ادرک کاقہوہ پڑھا تھا وہی علاج کرتی ہوں الحمدُ ﷲبہت فرق پڑا ہے۔
اﷲتعالیٰ” عبقری “رسالے کو ترقی عطافرمائیں (آمین ثمہ آمین)اور ایک آزمایا ہوا علاج لکھ رہی ہوں ہوسکے تو عبقری میں شائع کردےجئے شاید کسی پریشان حال بیمار کو شفا مل جائے۔کچھ سال پہلے کی بات ہے کہ چونکہ مجھے نزلہ ہی رہتا تھا تو میرا گلا آگے کی طرف سے بڑھنے لگا۔ زیادہ نہیںبڑھا تھا۔ بار بار ڈاکٹر کے پاس جانا پڑتا تھا میں بہت پریشان تھی ڈاکٹر کہتے تھے کہ آپریشن ہوگا کیونکہ تھائی رائےڈ گلینڈز کا مسئلہ ہے۔ مگر میں بہت پریشان تھی۔ایک دن یونہی ایک ڈاکٹر کو دکھایا تو انہوں نے کہا کہ ابھی تو ابتداءہے آپریشن نہ کرواﺅ بلکہ ایسا کرو کہ ایک کچی پیاز بغیر دھوئے کاٹ کرکھانے کے ساتھ روزانہ دوپہرکے وقت استعمال کرو ۔میں نے ویسا ہی کیا اور تیسرا مہینہ پیاز کھاتے نہ گزرا تھاکہ گلا بالکل ٹھیک ہو کر اپنی اصلی حالت پر آگیا۔
(مرسلہ : مبینہ عبدالسلام صدیقی ۔ لطیف آباد حیدر آباد )

مختصر آیت سے دردِگر دہ سے نجا ت
اَﷲُ نُورُالسَّمٰوٰتِ وَالاَرضِ(سورئہ نو ر آیت نمبر 35 )کاعمل گُردوں کی درد کیلئے مفید ہے۔ یہ آیت ہر نماز کے بعد سات دفعہ پڑھنی ہے ۔ بھائی قاسم کے گردے میں درد ہوتی تھی۔ اس نے یہ عمل کیا اس کا درد ہٹ گیا ۔پھر میں نے بھی اس عمل کا تجربہ کیا تو مجھے بھی شفاہوئی ۔میرا ایک دوست الائیڈ ہسپتال میں داخل تھا اس کے گردے میں 19پتھریاں تھیں۔ اس کو بہت تکلیف تھی میں نے اسکو یہ عمل بتایا۔ اس نے وہ عمل کیا اور کہنے لگا کہ میرا آپریشن کئی دن بعدہوا لیکن جب سے میں نے یہ عمل کیا میرا درد رک گیا۔

حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی زیا رت کا آسان عمل
(2)آپ نے ایک درود شریف والاعمل بتایا تھا ۔ درود شریف یہ تھا( صَلَّی اﷲُ عَلٰی مُحَمَّد) شروع شروع میں میں نے اس کو بہت پڑھا تو مجھے حضورصلی اللہ علیہ وسلم کی زیارت نصیب ہوئی اور حضرت حسن رضی اللہ عنہ اور حضرت حسین رضی اللہ عنہ بھی ساتھ تھے۔ (مرسلہ : محمد عا صم ۔ جہانیاں)

مرض بواسیر کا ایک مجرب نسخہ
یہ نسخہ ایک بوڑھے شخص نے بتایا ہے (مجھے نہیں بتایا)۔ آپس میں باتیں کررہے تھے ،میں نے نوٹ کیا ۔امید ہے قارئین اس سے فائدہ اٹھاکر ہمیں دعاﺅں میں یاد رکھیں گے۔

نسخہ
اندرائن بڑے دوتین عدد،ہریرہ زرد حسب ضرورتترکیب:۔اندرائن کو اسطرح کاٹ دے کہ درمیان میں سے خالی کرسکے اور بعد ہریرہ زرد جتنا آسکے ڈالدے اور اندرائن کا کاٹا ہوا ٹکڑا واپس چسپا دیں ۔کسی ربڑ سے مضبوطی سے باندھ لیں اور کسی دےگچی میں خوب ابال لیں۔ تاکہ اندرائن کی کڑواہٹ ہریرہ زرد میں آجائے اورہریرہ زرد کو تھال میں نکا ل کرخشک کرلیںاور خوب پیس لیںاور صبح شام آدھاچمچ چا ئے والاکھانا کھانے کے بعد کھالیاکریں چند دن چاول بڑا گو شت وغیرہ سے پرہےز کریں ۔اس شخص کا کہنا ہے کہ اس میں جان بوجھ کر وہ چیزیں کھائی جس سے بواسیر میں پرہےز ضروری ہوتا ہے لیکن الحمدﷲ کچھ نقصان نہیں ہوا ۔(مر سلہ : ایم صادق کاکڑ،دکی بلوچستان)

آب شفاءخیر وبرکت
1۔برتن میں پانی ڈالیں اور مندرجہ ذیل وظیفہ پڑھ کر اپنے ہاتھوں پر پھونک کر اپنے جسم کو مساج کریں اور پانی پر پھونک ماریں۔ضرورت کے مطابق پانی ڈالیں اور تین گھونٹ میں پانی پےئیں۔ اس پانی میں کوئی دوسرا پانی نہیں ڈالنا،بلکہ ختم ہو نے پر نیا پانی تیار کریں،انشاءاﷲ پریشانی ، ذہانت،رزق کی کمی کے لیے لا جو اب ہے۔ تعویز ،دھا گہ ، آسیب ،نحوست کے خاتمہ اور صحت و تندرستی کیلئے مفید ہے۔
3باراَعُوذُبِاﷲِ مِنَ الشَّیطٰنِ الرَّجِیمِ،3باربِسمِ اللّٰہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِیمِ، 3بار درود پاک (ابراہیمی ) ،3بارآیت الکرسی،ہر ایک میں سات بار وَلَایَئُودُہ‘ حِفظُھُمَا وَھُوَالعَلِیُّ العَظِیمُ (سورئہ بقرہ آیت نمبر 255 )
11مرتبہ سَلٰمقَولًامِّن رَّبٍّ رَّحِیمٍ (سورئہ یسین آیت نمبر 58 )تین مرتبہ ہرایک قل 3مرتبہ تیسرا کلمہ،3مرتبہ دوسرا کلمہ،3مرتبہ پہلا کلمہ، 3مرتبہ الحمدشریف۔11مرتبہ درودوسلام اور برکت (لامحدود)
الَلَّھُمَّ صَلِّ وَسَلَّم وَبَارِک عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّعَلٰی آلِ مُحَمَّدٍ بِعَدَدِکُلِّ مَعلُومٍ لَّکَ دَائِمًا اَبَدًا
اے اﷲجل شانہ تو محمد صلی اللہ علیہ وسلم او رمحمدصلی اللہ علیہ وسلم کی آل پر ہمیشہ ہمیشہ کیلئے اتنی تعداد میں درود سلام اور برکت بھےجتارہ جتنا کہ تیرا علم ہے ۔313یا101دفعہ پڑھ کر ضرور سوئیں یہ زندگی میں ایک دفعہ ہی پڑھنا کافی ہے کیونکہ یہ درودوسلام اور برکت لامحدود ہے۔ (مر سلہ : رانا ذوالفقار علی ۔ راولپنڈی)

زچگی اور سورة یسین کے شفائی اثرات
زچگی کے موقعہ پر سورة ےٰسین پڑھ کر دم کرکے پلانے سے زچہ کو عافیت سے فراغت کے بہت سے واقعات سنے بھی اور خود کو بھی پیش آئے ۔دوواقعات جو مجھے خود پیش آئے عرض کرتا ہوں ۔
ایک دن میں گھر آیا تو اہلیہ نے کہا کا اقبال (ہمسایہ )کی بیگم کا آپریشن ہے پتہ کر آئیں۔میں نے حیرانی سے پوچھا ”آپریشن“؟کس چیز کا ؟اہلیہ نے بتایا کہ ڈلیوری کیس ہے۔میں اور بھی حیران ہوا اس کے پانچ بچے ہیں۔بڑا بیٹا نہم کلاس میں ہے اور باقی بچے بھی سکول جارہے ہیں۔ پہلی ڈلیوری تو پر تو بعض خواتین کو مسئلہ پیش آتا ہے ۔خیر میں حیران ساہوکر گھر سے نکلا۔ راستہ میں مسجد کے قاری صاحب مل گئے ان کو قصہ بتایا تو وہ بھی ہمراہ ہولیے۔ہسپتال پہنچے تو اقبال صاحب تو نہ ملے مشورہ کرکے ان کی چھوٹی بچی سے ایک پیالی میں پانی منگوایا۔ میں نے اور قاری صاحب نے سورة ےٰسین پڑھ کر پانی پر دم کرکے دیا اور کہا کہ ابھی جاکر انہیںپلاﺅ اﷲپاک کا ایسا کرم ہوا کہ پندرہ منٹ میں ہی نار مل ڈیلیوری ہوگئی ۔لےڈ ڈاکٹر نصف گھنٹہ بعد آئی تو بہت حیران ہوئی۔ بے شک اﷲکے پاک کلام میں بہت برکت ہے اس کیس کیلئے 27000روپے کی فیس طے ہوئی تھی۔
(2) اس طرح ایک روز اہلیہ نے فون کیا کہ جلد گھر آئیں میں گھبراکر گھر کی طرف لپکا۔پہنچ کر معلوم ہوا کہ محلے میں ملنے والوں کی بچی(جسکی پچھلے سال ہی شادی ہوئی تھی) زچگی میں بہت تکلیف میں ہے ۔میں نے فوراً وضوکیا، دو رکعت نماز نفل پڑ کر سورة یٰسین پڑھ کر چینی پر دم کیا اور بچی کو کھلانے کو کہا ۔اﷲپاک نے فضل فرمایا اور بچی کو چند منٹوں کے بعد فراغت عطا فرمائی۔

ٹی بی کیلئے
کوری ایک چھٹانک، اسخاری ایک چھٹانک، بادیان ایک چھٹانک، مصری ایک پاﺅ یہ تمام ادویات کوٹ چھان کر سفوف بناﺅ صبح و شام دس ماشے سے پندرہ ماشے تک پانی کے ساتھ استعمال کرو۔ قارئین کرام مندرجہ بالا ینسخہ ایک ساٹھ سالہ حکیم کی زندگی کا طبی نچوڑ ہیں جس نے احقر کو احسان و شفقت سے عنایت کیے تھے احقر نے من و عن بیان کیے امید ہے کہ میری سخاوت کی داد دو گے۔
اب چند نسخے مزید پیش کرنے کی سعادت حاصل کرہا ہوں یہ نسخے ایک روحانی دوست نے عملیات کے بدلے میں دئیے ہیں اور میں عبقری کے قارئین کو دعا کے بدلے میں دے رہا ہوں۔

نسخہ 1-تبخیر معدہ، بدہضمی، کھٹے ڈکار وغیرہ
نمک سیاہ، سنڈھ، ٹھیکری نوشادر، کالی مرچ تمام ہم وزن لیں کوٹ چھان کر اس میں تین ماشہ ست پودینہ شامل کر لیں بعد میں کیپسول بھر لیں۔ خوراک کھانا کھانے کے بعد ایک کیپسول استعمال کریں۔

نسخہ نمبر 2- برائے لیکوریا، سیلان رحم، جریان
کمرکس، لودھ پٹھانی، مشک، کائیپھل، سمندر سوکھ، تمام ہم وزن تمام ادویات کو کوٹ چھان کر سفوف بنا لیں صبح نہار منہ شربت دودھ یا باسی پانی کے ساتھ دس گرام استعمال کریں۔

نسخہ نمبر 3- گنٹھیا، جوڑوں کا درد، ریح گردہ
گوگل پنیا، پنیر ڈوڈی، اجوائن دیسی مصبر سیاہ ہم وزن دس سالہ پرانا گڑ 100گرام کا تمام ادویات کو باریک پیس کر اس میں آخر میں گڑ کوٹ کر شامل کر لیں اور پانی اور گوند کیکر ملا کر چنے کے برابر گولیاں بنا لیں۔ رات سوتے وقت ایک گولی تازہ پانی کے ساتھ اگر تکلیف زیادہ ہو تو 2گولی فوری استعمال کرائیں۔
ریح گردہ کیلئے ایک گولی نیم گرم پانی کے ساتھ دیں۔
خونی و بادی بواسیر کیلئے رات سوتے وقت ایک گولی ہمراہ آب تازہ دیں۔
نسخہ نمبر 4- سفوف مغلظ، دکاوت حس، جریان، احتلام سرعت انزال اور کمی قوت باہ کیلئے بے مثال ہے۔

قوت باہ کیلئے بے مثال تحفہ
موچرس، سمندر سوکھ، بیج بند، موصل سیاہ، تالمکھانہ، ثعلب دانہ، گوند چھوہارہ،گری سنگھاڑہ، بوپھلی، گوند ببول، چہار مغز، موصلی سفید، ستاور، بہمن سفید، بہمن سرخ، تخم کونج، دار چینی، گوند کتیرا۔
ہوالشافی: تمام اشیاءہم وزن لیکر کوٹ کر سفوف بنا ئیں اور ایک چمچ صبح ناشتہ کے بعد اور رات سونے سے قبل ایک چمچ ہمراہ دودھ استعمال کرائیں۔ مردوں کے تمام جنسی امراض اور عورتوں کے لیکوریا میں ازحد مفید ہے۔ آخر میں تمام قارئین سے درخواست کی جاتی ہے کہ حکیم محمد طارق محمود صاحب کو خصوصی دعاﺅں میں یاد رکھا جائے جن کی بدولت ایسے قیمتی رازوں کا انکشاف ہوتا جارہا ہے۔

مومن کا ہتھیار
قرآن مجید میں اللہ تعالیٰ فرماتے ہیں، ”تمہارے پروردگار نے کہا ہے تم مجھ سے مانگو میں ہی تم کو دوں گا“
ہمارے نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کا فرمان ہے: دعا کرنے سے عاجزمت ہو اور اس سے غفلت مت کرو کیونکہ دعا کرنے والا برباد و ہلاک نہیں ہوتا۔ ایک حدیث میں ہے کہ ”دعا نجات دلاتی ہے اس بلا سے جو آنے والی ہے اور جو ابھی نہیں آئی ہے۔ بلا ومصیبت آسمان سے اترتی ہے کہ دعا اس سے جا ملتی ہے تو دونوں لڑتی ہیں یعنی بلا آسمان سے اترنا چاہتی ہے تودعا اس کو روکتی ہے اور دعا و بلا کا یہ مقابلہ قیامت تک جاری رہے گا۔ خالص دعاﺅں میں یہ اثر ہے کہ دعا تقدیر کو بھی پھیر سکتی ہے۔ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے بھی فرمایا ”دعا ہی تقدیر کو پھیر سکتی ہے۔ (ترمذی) رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم فرماتے ہیں دعا عبادت ہے، دعا عبادت کا مغز ہے اور فرمایا دعا مومن کا ہتھیار ہے۔
اللہ تبارک و تعالیٰ کو سب سے پیاری چیز دعا لگتی ہے جس کی طبیعت دعا کی طرف مائل ہو گئی ہو تو اس پر اللہ تعالیٰ کی رحمت ہو گئی کیونکہ دعا آخر قبول ہو ہی جائے گی اور اس کی دعا قبول کرنے کیلئے ہی تو اس بندے کو دعا کی توفیق مل رہی ہے۔ کہا جاتا ہے کہ عیش کے دنوں میں اللہ تعالیٰ کو یاد رکھو، سختی کے دنوں میں اللہ تمہیں یاد رکھیں گے ایک حدیث میں ہے جو شخص اللہ تعالیٰ سے سوال نہیں کرتا یعنی دعا نہیں کرتا اللہ تعالیٰ اس سے ناراض ہو جاتے ہیں۔
اگر تم بے پروا ہو کر دعا کرو گے تو اللہ تعالیٰ بھی تم سے بے نیاز ہو جائیں گے اور اگر تم پوری توجہ سے دعا کرو گے تو اللہ تعالیٰ بھی پوری توجہ سے سنیں گے۔ تقدیر اللہ تعالیٰ کی ہی لکھی ہوئی ہے اور دعا اللہ تعالیٰ سے درخواست ہے اگر چاہے تو اپنے فیصلے میں تبدیلی کرے اس کو ہر طرح کا اختیار ہے۔
دعا کی قبولیت کی چند شرائط ہیں ”کھانے پینے پہننے اور کمانے میں حرام سے بچنا کسی گناہ یا قطعی رحمی کی دعا مت کریں۔ جوچیز روز ازل سے ہو چکی اس کے خلاف دعا نہ کرے۔ مثلاً یوں نہ کہے دعا کرتا ہوں اللہ تعالیٰ قبول ہی نہیں کرتے۔
خلوص دل سے مانگی گئی دعا اللہ تعالیٰ ضرور پوری کرتے ہیں لیکن مقررہ وقت پر۔ یوں سمجھو کہ جب تک کھانا اچھی طرح پک نہ جائے ماں اپنے بچے کو کھانا نہیں دیتی وہ کھانا پکنے کے وقت کا انتظار کرتی ہے لیکن بچہ اپنی نادانی کی وجہ سے روتا اور ضد کرتا ہے کیونکہ وہ دیر کی مصلحت نہیں جانتا کیونکہ اللہ تعالیٰ ایک ماں کی نسبت اپنے بندے سے 70گنا زیادہ محبت کرتا ہے لہٰذا بعض اوقات آدمی اللہ تعالیٰ سے کوئی ایسی چیز مانگتا ہے جو اس کے حق میں مضر ہوتی ہے تو وہ اللہ تعالیٰ قبول نہیں فرماتے بلکہ اس کے بدلے اس سے بہتر چیز عطا کرتے ہیں‘ہر حال میں دعا نہیں چھوڑنی چاہیے۔
(عابد محمود، صادق آباد)

عورتوں کا کثرت سے جہنم میں جانا
حضور صلی اللہ علیہ وسلم کا ارشاد ہے کہ میں جنت کے دروازہ پر کھڑا ہوا تھا میں نے دیکھا کہ اس میں کثرت سے داخل ہونے والے فقراءہیں اور وسعت والے ابھی رکے ہوئے ہیں اور جہنمی لوگوں کو جہنم میں پھینک دیا گیا اور میں جہنم کے دروازے پر کھڑا ہوا تو میں نے اس میں کثرت سے داخل ہونے والی عورتیں دیکھیں۔
عورتوں کے جہنم میں کثرت سے داخل ہونے کی وجہ ایک اور حدیث میں آئی ہے۔ حضرت ابوسعید رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم عید کے دن عید گاہ میں تشریف لے گئے۔ جب عورتوں کے مجمع پر گذر ہوا تو حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے عورتوں سے خطاب فرما کر ارشاد فرمایا کہ تم صدقہ بہت کثرت سے کیا کرو۔ میں نے عورتوں کو بہت کثرت سے جہنم میں دیکھا ہے۔ انہوں نے دریافت کیا۔ یارسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم یہ کیا بات ہے۔ حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ عورتیں لعنت (بددعائیں) بہت کرتی ہیں اور خاوند کی ناشکری بہت کرتی ہیں اور یہ دونوں باتیں عورتوں میں ایسی کثرت سے ہیں کہ حد نہیں جس اولاد پر دم دیتی ہیں ہر وقت اس کی راحت اور آرام کی فکر میں رہتی ہیں۔ ذرا ذرا سی بات پر اس کو ہروقت بددعائیں، تو مرجا، تو بدبخت، تیرا ناس ہو جائے وغیرہ وغیرہ الفاظ ان کا تکیہ کلام ہوتا ہے اور خاوند کی ناشکری کا تو پوچھنا ہی کیا ہے وہ غریب جتنی بھی ناز برداری کرتا رہے، ان کی نگاہ میں وہ لاپروا ہی رہتا ہے۔ ہر وقت اس غم میں مری رہتی ہیں کہ اس نے ماں کو کوئی چیز کیوں دے دی، باپ کو تنخواہ میں سے کچھ کیوں دے دیا، بہن بھائی سے حسن سلوک کیوں کر دیا۔
آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ عورتیں احسان فراموشی کرتی ہیں، خاوند کی ناشکری کرتی ہیں۔ اگر تو تمام عمر ان میں سے کسی پر احسان کرتا رہے پھر کوئی ذرا سی بات پیش آجائے تو کہنے لگتی ہے کہ میں نے تجھ سے کبھی کوئی بھلائی نہ دیکھی۔
آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ عورتوں کی عام عادت ہے جتنا بھی ان کے ساتھ اچھا برتاﺅ کیا جائے، اگر کسی وقت کوئی بات ان کے خلاف طبع پیش آجائے تو خاوند کے عمر بھر کے احسان سب ضائع کر دیتی ہیں۔ اس گھر میں مجھے کبھی چین نہ ملا، ان کا خاص تکیہ کلام ہے ان روایات سے عورتوں کے کثرت سے جہنم میں داخل ہونے کی وجہ معلوم ہونے کے علاوہ یہ بھی معلوم ہوا کہ اس سے بچاﺅ اور حفاظت کی چیز بھی صدقہ کی کثرت ہے چنانچہ اس حدیث میں ہے کہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم جب یہ ارشاد فرما رہے تھے تو حضرت بلال رضی اللہ عنہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے ساتھ تھے اور صحابی عورتیں کثرت سے حضور صلی اللہ علیہ وسلم کا پاک ارشاد سننے کے بعد اپنے کانوں کا زیور اور گلے کا زیور نکال نکال کر حضرت بلال رضی اللہ عنہ کے کپڑے میں جس میں وہ صدقہ جمع کررہے تھے، ڈال رہی تھیں۔
( اقراءیونس، ملتان)

قبض سے نجات
ایک عوامی نسخہ، جو چلتے پھرتے حاصل ہوا۔ قارئین عبقری کی نذر کرتے ہیں بہت سے لوگوں کو فائدہ ہوا۔ آپ بھی اس سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔ تقریباً آٹھ نو روز سے مسلسل قبض کی حالت تھی کسی صورت دور ہونے کا نام نہ لیتی تھی طبیعت میں بوجھل پن، سردرد، پیٹ میں مروڑ، سینے میں جلن، کسی نے کہا دودھ میں دیسی گھی ڈال کر کھاﺅ وہ بھی کھایا مگر آرام نہ آیا۔ اپنی ہومیو میڈیسن بھی کھائیں مگر فائدہ نہ ہوا۔ میڈیسن کا ایک ڈسٹری بیوٹر لاہور سے آیا۔ طبیعت میں بوجھل پن تھا اس نے کوئی بات کی میں نے اس کو ڈانٹ دیا کہ میری اپنی طبیعت ٹھیک نہیں تم اپنا رونا رو رہے ہو اس نے طبیعت کے بارے میں پوچھا میرا جواب تھا کہ پچھلے نو دنوں سے قبض کی شکایت ہے جو کسی صورت دور نہیں ہو رہی۔ اس نے کہا ایک آزمودہ نسخہ بتاتا ہوں کئی لوگوں کو بتایا اور فائدہ مند ثابت ہوا آپ بھی استعمال کریں۔ اس نے بتایا کہ اچھی اور خالص قسم کا عرق گلاب لیں اور آدھا گلاس عرق گلاب پی لیں چنانچہ اس کے کہنے پر ایسا ہی کیا۔ یوں محسوس ہوا جیسے کسی نے آگ پر پانی ڈال دیا تقریباً ایک گھنٹہ بعد بغیر پوچھے پھر تھوڑا سا عرق گلاب پی لیا۔ ابھی کچھ دیر گزرنے نہ پائی تھی کہ کھل کے اجابت ہوئی۔ حیرت کی بات یہ تھی کہ پیٹ خراب نہ ہوا اور ہلکا پھلکا ہو گیا۔ مروڑ ختم ہوگئے۔ بے چینی ختم ہوگئی، طبیعت میں ہلکا پن آگیا۔ اب تو قبض کو دور کرنے کیلئے میری روٹین بن گئی ہے کہ 2چمچ صبح اور 2شام کو پی لیتا ہوں اس سے طبیعت بحال رہتی ہے بلکہ اب تو دائمی قبض والے مریضوں کو بھی استعمال کرواتا ہوں۔ اللہ پاک اس ڈسٹری بیوٹر کا بھلا کرے جس نے ایک نئی تحقیق سے روشناس کروایا۔ مستقل استعمال سے جو فوائد حاصل ہوئے ان میں طبیعت کا ہشاش بشاش رہنا، سردرد کا خاتمہ، قبض کا خاتمہ، بوجھل پن ختم، قارئین عبقری اس کا استعمال کریں اور مستقل فائدہ اٹھائیں۔
(ڈاکٹر ظفر حمید ملک)

بالوں کی حفاظت کیلئے
1- ٹوٹے ہوئے دندانوں کی کنگھی کبھی نہ استعمال کیجئے۔
2- دوسرے کی استعمال شدہ کنگھی استعمال کرنے سے پرہیز کریں۔
3- سر دھونے کیلئے ٹھنڈا پانی استعمال کریں البتہ سردی کے موسم میں ہلکے گرم پانی سے سر دھوئیں‘ تیز گرم پانی سے کبھی سر نہ دھوئیں اس سے سر میں خشکی پیدا ہوتی ہے۔ بالوں کی جڑیں کمزور ہونے کی وجہ سے بال گرنے لگتے ہیں۔
4- نہانے سے پہلے بالوں میں تیل لگا لیں اس سے بالوں کی جڑیں مضبوط ہوجاتی ہیں۔
5-بازاری خوشبودار تیلوں کے بجائے ناریل یا سرسوں کا خالص تیل استعمال کریں۔
6- کبھی کبھی نیم گرم پانی میں تھوڑا سا سرکہ اور لیموں کا عرق ملا کر اس سے سر دھو لیا کریں۔
7- خوش رہنے کی کوشش کریں کیونکہ خوش رہنے اور بالوں کی تندرستی میں بہت گہرا تعلق ہے‘ چڑچڑے پن سے، فکر اور خوف سے سر کی شریانوں میں خون کی روانی باقاعدہ نہ ہونے سے بالوں پر اثر پڑتا ہے کیونکہ ہیجانی کیفیت میں شریانیں سکڑ جاتی ہیں اور بالوں کی جڑوں کو تقویت پہنچانے کیلئے خون کا پہنچنا بند ہو جاتا ہے۔ دماغی پریشانیوں کے وقت آپ دس منٹ یا بارہ منٹ بالوں میں کنگھی کریں یہ بالوں کیلئے فائدہ مند ہے۔
(رابعہ نورین کنول دائرہ دین پنا ہ )

انمول خزانے کا کرشمہ
کالج کے گراﺅنڈ کی طرف ایک شہد کی مکھیوں کا بڑا سا چھتا بنا ہوا تھا اتفاق سے اسی طرف بچوں کی ٹک شاپ بھی تھی جب بچے بریک کے ٹائم وہاں اکٹھے ہوئے تو کسی شرارتی بچے نے شہد کی مکھیوں کے چھتے پر پتھر پھینک دیا جس سے شہد کی مکھیاں بچوں کو کاٹنے لگیں‘ بھگدڑ مچ گئی اور بھاگ دوڑ میں بچے زخمی ہوگئے میں وہیں موجود تھی سب بچے اور بڑے چیخ چیخ کر بھاگنے لگے مگر میں ثابت قدمی سے وہیں کھڑی رہی اور بچوں کو باہر نکالنے لگی میرے اوپر نیچے سامنے اور پیچھے بھی شہد کی مکھیاں ہی مکھیاں تھیں مگر ان کو کاٹنے کا حکم نہ تھا کیونکہ میں انمول خزانے روزانہ پڑھتی ہوں جس کے آخر میں یہ دعا ہے۔ اَللّٰہُمَّ اِنِّی اَعُوذُ بِکَ مِن شَرِّ نَفسِی وَمِن شَرِّ کُلِّ دَآبَّةٍ اَنتَ اٰخِذ ۰ بِنَا صِیَتِہَا اِنَّ رَبِّی عَلٰی صِرَاطٍ مُستَقِیمٍo
چنانچہ میں نے سب زخمی بچوں کو باہر نکالا اور سب بچوں کو دوائی لگائی اور اللہ کا شکر ادا کیا اور اگلے دن سب کو بتایا کہ جو دعا پڑھی ہے آپ سب کو یہ دعا سکھائی ہے اور میں نے بتایا کہ میں روزانہ یہ دعا پڑھتی ہوں اس لیے میں محفوظ رہی۔